Urdu font shayari on life and zindgi 2016


ہر ملاقات کو یاد ہم کرتیں ہیں،
کبھی چاہت کبھی علیحدگی کہ آہ بھرتے ہے،
یوں تو روز تم سے سپنو میں بات کرتے ہیں پر،
پھر اگلی ملاقات کا انتظار کرتے ہیں !!

****************************
کاغذ پہ ہم نے زندگی لکھ دی،
اشكو سے سینچ کر خوشی لکھ دی،
درد جب ہم نے نکالا لپھذو پہ،
علامت (لوگو) نے کہا واہ کیا غزل لکھ دی مسٹر !!

********************************
الپھت کا اکثر یہی دستور ہوتا ہے،
جسے چاہو وہی دور ہوتا ہے.
دل ٹٹ کر بکھرتے ہیں اس قدر،
جیسے کوئی گلاس کا کھلونا چور چور ہوتا ہے !!

*********************************

نظر نے نظر سے ملاقات کر لی،
رہے دونوں خاموش پر بات کرلی،
محبت کی فضا کو جب خوش پایا،
ان آنکھوں نے رو رو کے برسات کر لی !!

*********************************
تیری ہر ادا محبت سی لگتی ہے،
ایک لمحے کی علیحدگی مدت لگتی ہے،
پہلے نہیں سوچا تھا اب سوچنے لگے ہم،
زندگی کے ہر لمحوں میں تیری ضرورت سی لگتی ہے

************************************
ڈھلتی شام کا کھلا احساس ہے،
میرے دل میں تیری جگہ کچھ خاص ہے،
تو نہیں ہے یہاں معلوم ہے مجھے ...
پر دل یہ کہتا ہے تو یہیں میرے پاس ہے

************************************

مسکراہٹ تیرے ہونٹوں سے کہی جائے نہ،
آنسو تیری پلکوں پہ کہی آئے نہ،
مکمل ہو تیرا ہر كھواب،
اور جو پورا نہ ہو وہ كھواب کبھی آئے نہ !!

*********************************
میرا دل دھڈكتا ہے صرف آپ کے لئے،
میرا دل تڈپھتا ہے صرف آپ کے لئے،
نہ جانے مے کیوں ڈرتا ہوں آپ سے،
آپ کی محبت کا اظہار کرنے کے لئے !!

*********************************

ہر خاموشی کو اقرار نہیں کہتے،
ہر ناکامی کو شکست نہیں کہتے،
کیا ہوا اگر ہم آپ نہیں ہو سکتے،
صرف پا لینے سے محبت نہیں کہتے !!


****************************

سمجھا دو اپنی يادو کو ،
وہ بین بلائے پاس آیا کرتی ہے،
آپ تو دور رہ کر ستاتے ہو مگر ،
وہ پاس آکر رلایا کرتی ہے !!

*************************

محبت سے گم، گم سے ہم پےرشان ہے
لاكھو ہیں دیوانے تیرے، مگر ہم ہی بدنام ہے
اتنا بھی نہ ستاو اپنے چاہنے والو کو
پاگل دیوانے ہی سہی مگر پھر بھی انسان تو ہے ... ..

*************************

خوبصورتی تو بہت دی خدا نے تمہیں
مگر ہمیں تمہاری وفا نہ مل سکی
بہت آگ دی ہم نے بجھتے چراغ کو
مگر محبت کی شمع پانی نہ سکی ......


************************

اگر مجھ پر اعتبار کیا ہوتا
تو آپ کو جانے کیا دیا ہوتا
گمو کی گہرائی میں اگر چھوڑ آتے ہمیں
تو بھری محفل میں نہ زہر پیا ہوتا .......

ہم روٹھ جانے کی خطا کب تک یاد کرو گے
ہم مر جائیں گے تیری یاد میں تو یاد کرو گے
پھر نہ ہم یہاں لوٹ کر اےگے
رو رو کر ملنے کی فریاد کرو گے ...... .

**********************

میرے اشكو سے تو اپنا دامن صاف کر
اکیلا تڑپتا ہوں میں اے خدا انصاف کر
ان کے کفر میں بھی کچھ راج چھپا ہے
میرے خدا تو ان کے ہر گناہ معاف کر .......

ہر بار تیری سلامتی کی دعا کی

**********************

مفلسی جب بدنصیبی میں تبدیل لگی
اور محبت میری بے بسی میں تبدیل لگی
تب محبت بھرے گيتے کو نیلام کر دیا
شاعری جب میری آوارگی میں تبدیل لگی ... ..

نگاہ بدلی مگر عہد وفا نہیں بدلا
طوفان میں کبھی ہم نے ناكھدي نہیں بدلا
بهارے آئی اور آ کر چلی گئی او غالب
میرے چمن سے لیکن دورے كھذا نہیں بدلا ......


***********************

نجانے کس کو حاصل کرنے کی خواہش میں غالب
میں رفتہ رفتہ خود کو کھو رہا ہوں .......

وفا کی قیمت کوئی مجھ آکر پوچھے
زندگی بیچ دی میں نے اسے حاصل کرنے کی خاطر ...

*************************

تمنا ہے ان کے قریب سے دیکھے،
قریب ہوں تو نظر اٹھائی نہیں جاتی
اس عشق کی آگ ہی ایسے ہے
لگ جاتی ہے ، لگائی نہیں جاتی .........
تیرے پیار میں ہم کچھ اس قدر کھو گئے ہے
جامنے سے بے خبر ہم تیرے دل میں سو گئے ہے
مت اٹھانا اب ہمیں اپنے دل کی گود سے
ہم ہمیشہ کے لئے اب تمہارے ہو گئے ہے ....

***********************

شام ہوتے ہی دل اداس ہوتا ہے
ٹوٹے ہوئے خوابوں کے سوا کچھ نہ پاس ہوتا ہے
تمہاری یاد ایسے وقت بہت آتی ہے
جب کوئی بندر ارد گرد ہوتا ہے ... ..
یہ جلپھے ہے تمہاری یا ریشم کے جال
یہ جلپھے ہے تمہاری یا ریشم کے جال
کتنے كھشنسيب ہیں وہ چوہا،
جنہوں نے كترے تمہارے بال .......

***********************

پھونک دیا جس نے هسرتو کا چمن
کلیوں کو نصیب نہ ہو پایا کفن
کہاں لے جاتا جاتا ناکام ارجو کو مے
كھوابو کے ساتھ کر دیا انہیں بھی دفن ... ..
پھول الپھت کا دل میں کیوں کھلایا تھا
خواب گھر بسانے کا مجھے کیوں دکھایا تھا
بھلانا تھا جب مجھ تو ایک دن
پھر مجھے اپنا دیوانہ بنایا تھا ......

************************

اپنا سب کچھ جو لٹا کر واپس ہے
جانے کتنوں کو اپنا بنا کر لوٹا ہے
خود اپنے گھر میں اندھیرا کرکے
بےشمار گھروں میں چراغ جلا کر واپس ہے ......


*************************


No comments:

Post a Comment